ترک کونسل نے فلسطینیوں کے خلاف اسرائیلی جارحیت کا دھماکہ کیا



ترک کونسل نے بدھ کے روز فلسطینیوں پر اسرائیلی حملوں سے انکار کردیا۔

یروشلم کا تذکرہ کرتے ہوئے اس نے ایک بیان میں کہا ، "ہم ان واقعات پر اپنی تشویش کا اظہار کرتے ہیں جو رمضان المبارک کے مقدس مہینے میں رونما ہونے والے واقعات اور القدس الشریف کی ناقابل قبولیت کی خلاف ورزی کی ہیں۔”

کونسل نے مسجد اقصیٰ میں عبادت کرنے والے بے گناہ فلسطینی شہریوں کے خلاف اسرائیلی سیکیورٹی فورسز کے ہتھیاروں کے استعمال اور غیر متنازعہ طاقت کی مذمت کی اور مطالبہ کیا کہ اسرائیل صورتحال کے پرامن حل کے لئے ضروری اقدامات کرے۔ اس نے شہریوں پر حملوں اور مسلم مقدس مقامات پر مسلح دراندازیوں پر فوری طور پر روکنے کا مطالبہ کیا۔

اس نے اس بات پر زور دیا کہ اسرائیل کے اقدامات ، جو بین الاقوامی قوانین کے اصول و اصول کی خلاف ورزی کرتے ہیں ، علاقائی سلامتی اور استحکام کو نقصان پہنچا سکتے ہیں۔

کونسل نے تمام متاثرین کے اہل خانہ سے تعزیت بھی کی اور زخمیوں کی جلد صحت یابی کی دعا کی۔

ناکہ بندی غزہ کی پٹی پر جاری اسرائیلی فضائی حملوں میں ہلاکتوں کی تعداد 60 ہو گئی ہےفلسطینی کی وزارت صحت نے بدھ کے روز کہا کہ یروشلم کی فلیش پوائنٹ مسجد اقصیٰ کے احاطے میں پرتشدد بدامنی نے جنم لیا۔ وزارت کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ غزہ میں متاثرین میں تین خواتین بھی شامل ہیں ، جن پر حماس کا کنٹرول ہے ، جبکہ 305 افراد زخمی ہوئے ہیں۔

حماس نے بدھ کے روز اس بات کی تصدیق کی ہے کہ اس کے متعدد اعلی کمانڈر اسرائیلی حملوں میں مارے گئے ہیں ، جن میں غزہ شہر میں اس کے فوجی سربراہ ، باسم اسیسا شامل ہیں۔ اسرائیل کی داخلی سیکیورٹی ایجنسی ، شن بیٹ نے بھی حماس کے چار دیگر اعلٰی شخصیات کی نشاندہی کی تھی جن کے بقول ہلاک ہوگئے تھے۔

اس کے جواب میں غزہ سے فائر کیے گئے راکٹوں سے دو اسرائیلی خواتین بھی ہلاک ہوگئیں حالیہ اسرائیلی جارحیت ایمرجنسی سروس میگن ڈیوڈ ایڈوم نے بتایا کہ غزہ کے بالکل شمال میں ، ساحلی شہر اشکیلون پر بھاری نشانہ بنایا گیا۔ مقامی برزیلائی میڈیکل سنٹر نے بتایا کہ وہ 70 زخمیوں کا علاج کر رہا ہے۔

حماس کے قاسم بریگیڈز نے اس قصبے کو "جہنم” میں تبدیل کرنے کا عزم کیا تھا اور ایک شدید وادی میں بارش کی ، جس نے دعوی کیا ہے کہ وہ صرف پانچ منٹ کے اندر اندر اشکلون اور قریبی اشڈود کی طرف 137 راکٹ فائر کرچکا ہے۔ ایک ایجنسی فرانس پریس (اے ایف پی) کے ایک نامہ نگار نے بتایا کہ منگل کے روز بلند بومس نے ایک بار پھر شہر کو ہلا کر رکھ دیا۔

اسرائیلی فوج کے ترجمان جوناتھن کونریکس نے اس سے قبل کہا تھا کہ غزہ کے حالیہ راکٹوں میں سے 90 فیصد کو آئرن ڈوم میزائل دفاعی نظام نے روک لیا ہے۔

کونریکس نے بتایا کہ اسرائیل کے لڑاکا طیاروں اور حملہ ہیلی کاپٹروں نے انکلیو میں فوجی اہداف پر 130 سے ​​زیادہ حملے کیے ہیں۔ اسرائیلی حکام نے بتایا کہ انہوں نے حماس کے 15 کمانڈروں کو ہلاک کیا ہے ، جبکہ فلسطینی گروپ اسلامی جہاد نے تصدیق کی ہے کہ اس کے دو سینئر شخصیات بھی ہلاک ہوئے ہیں۔

یروشلم میں تناؤ شہر کے بدترین انتشار کی لپیٹ میں آگیا ہے جب سے رمضان المبارک کے رمضان المبارک کے آخری جمعہ کے آخری جمعہ کے دن اسرائیلی فسادات پولیس نے فلسطینیوں کے بڑے ہجوم کے ساتھ جھڑپیں کیں۔

اس کے بعد سے رات کو بدامنی مقبوضہ مشرقی یروشلم میں 700 سے زائد فلسطینی زخمی ہوچکے ہیں ، جس نے پوری دنیا سے ڈی انسیلیشن اور تیز سرزنشوں کے بین الاقوامی مطالبات کو روکا ہے۔

حماس نے پیر کو اسرائیل کو متنبہ کیا تھا کہ وہ اپنی تمام افواج کو مسجد کے احاطے اور اس سے ہٹا دیں مشرقی یروشلم ضلع شیخ جرح، جہاں فلسطینی خاندانوں کو زبردستی ملک بدر کرنے سے ناراض مظاہروں میں اضافہ ہوا ہے۔

.



Source link

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے