دہلی کے اوکھلا مقام پر امام بارگاہ سجادیہ نورپور میں چل رہی مجالس میں مولانا راجانی حسن علی روحانی کا بھی خطاب

دہلی کے اوکھلا مقام پر امام بارگاہ سجادیہ نورپور میں چل رہی مجالس میں مولانا راجانی حسن علی روحانی کا بھی خطاب

دہلی : مورخہ 22 ستمبر / دہلی کے اوکھلا وستار کے امام بارگاہ سجادیہ نورنگر میں جناب سکینہ بنت الحسین ع پر چل رہی مجالس کی تیسری مجلس کو مولانا راجانی حسن علی روحانی نے خطاب کی جس میں مولانا راجانی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کربلا کا واقعہ ہی ایک ایسی درسگاہ ہیں کہ جس کے بعد انسان کو انسان کامل بننے کیلئے واقعہ کربلا مکمل رہنمائی فرمائیگا ۔ مولانا نے کہا کہ واقعہ کربلا کو فقط واقعہ کے طور پر نہیں بلکہ حقیقت اور اپنا سبق سمجھ کر اس پر غور و فکر کریں کہ ہم اس عبرت ناک واقعہ سے کتنی عبرت حاصل کررہے ہیں یا پھر یہ دیکھے کہ ہم میں کتنی صفات ایسی ہیں جو واقعہ کربلا سے مل رہی ہیں مولانا راجانی نے کہا کہ ایسا تو نہیں ہیکہ ہماری زندگی کا کوئی ایک پہلو بھی واقعہ کربلا سے نہ میل کھاتا ہو اورنہ ہی کوئی درس ہوں اور ہماری زندگی بھی کربلا کے واقعہ کے پس منظر کوسو دور ہوں آخر میں مولانا راجانی نے سکینہ بنت الحسین ع کے اوپر پڑنے والے مصائب کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ سکینہ بنت الحسین زندان شام میں آخر وقت تک اپنے بابا حسین علی ع پر گریہ کرتی کرتی اس دنیا سے چلی گئی اور وطن جانے کی حسرت بھی زندان شام میں دفن ہو گئی
Az Taraf Hasan Ali +919998269850

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے