شاہین شاہ میں سپر اسٹار بننے کیلئے سب کچھ ہے، عاقب جاوید

سابق ٹیسٹ کرکٹر اور لاہور قلندرز کے ہیڈ کوچ عاقب جاوید کا کہنا ہے کہ فاسٹ بولر شاہین شاہ آفریدی میں بہت بڑا سپر اسٹار بننے کے لیے سب کچھ ہے، بہترین بولر بننے کے لیے ان کا سفر کامیابی سے جاری ہے۔

عاقب جاوید نے کہا کہ دنیا میں اس وقت جو بولرز تیزی سے آگے آ رہے ہیں ان سب میں شاہین شاہ آفریدی سب سے زیادہ زبردست ہیں ، وہ بہت کچھ کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں ، مکینیکل ایکشن ہے ، ینگ ایج میں تینوں فارمیٹ کھیل رہے ہیں ، انہیں آرام کا موقع نہیں مل رہا یا انہیں آرام نہیں دیا جا رہا لیکن اس کے باوجود انہوں نے بہت زیادہ بہتر کیا ہے۔

انہوں نے کہاکہ شاہین شاہ آفریدی کا سفر جاری ہے ، قد کی وجہ سے بہت مدد مل رہی ہے ، نئے بال سے سوئنگ کرنا سیکھ لیا ہے ، لمبے اسپیل کرنے آ گئے ہیں ، اس لیے میں کہتا ہوں کہ شاہین شاہ آفریدی میں سپر اسٹاربننے کے لیے سب کچھ ہے۔

ویسٹ انڈیز کے خلاف ٹیسٹ سیریز برابر ہونے کے بارے میں عاقب جاوید نے کہا کہ ویسٹ انڈیز میں پچز اتنی آسان نہیں تھیں ، دوسرے ٹیسٹ میں فواد عالم کی غیر معمولی اننگز کی وجہ سے پاکستان ٹیم کھیل میں واپس آئی ۔

ان کا کہنا تھا کہ بیٹنگ کا مسئلہ نیا نہیں ہے ، یہ مسئلہ بہت پرانا چلا آرہا ہے ، اس کا ایک ہی حل ہے کہ اے ٹیم مستقل ہو جو مشکل کنڈیشنز میں آسٹریلیا ، انگلینڈ ، نیوزی لینڈ اور ساؤتھ افریقہ میں کھیلے ، ٹورز باقاعدگی سے ہوں ، اگر ایسا نہیں ہو گا تو پھر یہ مسئلہ چلتا رہے گا ۔

سابق فاسٹ بولر نے کہا کہ اظہر علی کی ماضی میں پرفارمنس اچھی رہی ہیں ، وہ ٹیم کے واحد سنئیر کھلاڑی ہیں ، اس کے بعد بابر اعظم اور فواد عالم کا نمبر آتا ہے ، اب فواد عالم کا ڈیبیو کب سے ہوا ہے اور اب تک صرف 13 ٹیسٹ میچز کھیلے ہیں ، اس سے اندازہ لگا لیں کہ ہم نے اپنی ٹیم کو کتنا توڑا موڑا ہے۔

انہوں نے کہاکہ یہ نہیں ہو سکتا کہ ایک ہی کھلاڑی ہو جس نے پچاس سے زائد یا ستر سے اوپر ٹیسٹ میچز کھیلے ہوں ، ویسٹ انڈیز کی ٹیم کو دیکھیں 6 سے زائد کھلاڑی ایسے ہیں جنہوں نے 40 سے زائد ٹیسٹ میچز کھیلے ہیں ، اس کا مطلب ہے کہ انہوں نے بھی ٹیم بنانے کا پلان کیا ہوا ہے ، ہمیں بھی لانگ ٹرم پلان کرنا ہو گا ، ٹیلنٹ کو شناخت کریں اور پھر مسلسل موقع دیں ۔

عاقب نے کہا کہ شان مسعود میں مجھے موجود ہ دونوں اوپنرز سے زیادہ ٹیلنٹ دکھائی دیتا ہے ، اس نے مشکل کنڈیشنز میں پرفارم کیا ہوا ہے ، لیکن ہم یہاں پلئیرز کے سال دو سال ضائع کر دیتے ہیں ، ہم نے فواد عالم کے 10 سال ضائع کر دیئے ہیں ،اگر تبدیلیاں کرتے رہیں گے تو نتائج حاصل نہیں ہو ں گے ، معاملات ایسے ہی رہیں گے۔



Source link

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے